Biblical Questions Answers

you can ask questions and receive answers from other members of the community.

What is the proper mode of baptism? بپتسمہ کا صحیح طریقہ کیا ہے

The simplest answer to this question is found in the meaning of the word “baptize.” It comes from a Greek word which means “to submerge in water.” Therefore, baptism by sprinkling or by pouring is an oxymoron, something that is self-contradictory. Baptism by sprinkling would mean “submerging someone in water by sprinkling water on them.” Baptism, by its inherent definition, must be an act of immersion in water.

Baptism illustrates a believer’s identification with Christ’s death, burial, and resurrection. “Or don’t you know that all of us who were baptized into Christ Jesus were baptized into his death? We were therefore buried with him through baptism into death in order that, just as Christ was raised from the dead through the glory of the Father, we too may live a new life” (Romans 6:3-4). The action of being immersed in the water pictures dying and being buried with Christ. The action of coming out of the water illustrates Christ’s resurrection. As a result, baptism by immersion is the only method of baptism which illustrates being buried with Christ and being raised with Him. Baptism by sprinkling and/or pouring came into practice as a result of the unbiblical practice of infant baptism.

Baptism by immersion, while it is the most biblical mode of identifying with Christ, is not a prerequisite for salvation. It is rather an act of obedience, a public proclamation of faith in Christ and identification with Him. Baptism is a picture of our leaving our old life and becoming a new creation (2 Corinthians 5:17). Baptism by immersion is the only mode that fully illustrates this radical change.

اس سوال کا سب سے آسان جواب لفظ “بپتسمہ” کے معنی میں پایا جاتا ہے۔ یہ یونانی لفظ سے نکلا ہے جس کا مطلب ہے “پانی میں ڈوب جانا”۔ لہٰذا، چھڑک کر یا ڈال کر بپتسمہ لینا ایک آکسیمورون ہے، جو کہ خود متضاد ہے۔ چھڑکنے کے ذریعے بپتسمہ لینے کا مطلب ہے “کسی کو پانی میں ڈبو کر ان پر پانی چھڑکنا۔” بپتسمہ، اپنی موروثی تعریف کے مطابق، پانی میں ڈوبنے کا عمل ہونا چاہیے۔

بپتسمہ مسیح کی موت، تدفین اور جی اُٹھنے کے ساتھ ایک مومن کی شناخت کو واضح کرتا ہے۔ “یا کیا تم نہیں جانتے کہ ہم سب جنہوں نے مسیح یسوع میں بپتسمہ لیا تھا اس کی موت میں بپتسمہ لیا؟ اِس لیے ہمیں موت میں بپتسمہ دینے کے ذریعے اُس کے ساتھ دفن کیا گیا تاکہ جس طرح مسیح باپ کے جلال کے ذریعے مُردوں میں سے جی اُٹھا، ہم بھی ایک نئی زندگی جی سکیں‘‘ (رومیوں 6:3-4)۔ پانی کی تصویروں میں ڈوب کر مرنے اور مسیح کے ساتھ دفن ہونے کا عمل۔ پانی سے باہر آنے کا عمل مسیح کے جی اٹھنے کی مثال دیتا ہے۔ نتیجے کے طور پر، بپتسمہ بپتسمہ بپتسمہ کا واحد طریقہ ہے جو مسیح کے ساتھ دفن ہونے اور اس کے ساتھ جی اٹھنے کی مثال دیتا ہے۔ چھڑکنے اور/یا بہا کر بپتسمہ بچوں کے بپتسمہ کی غیر بائبلی مشق کے نتیجے میں عمل میں آیا۔

وسرجن کے ذریعے بپتسمہ، جبکہ یہ مسیح کے ساتھ شناخت کا سب سے زیادہ بائبلی طریقہ ہے، نجات کے لیے شرط نہیں ہے۔ بلکہ یہ فرمانبرداری کا ایک عمل ہے، مسیح میں ایمان اور اس کے ساتھ شناخت کا عوامی اعلان ہے۔ بپتسمہ ہماری پرانی زندگی کو چھوڑ کر نئی تخلیق بننے کی تصویر ہے (2 کرنتھیوں 5:17)۔ وسرجن کے ذریعے بپتسمہ ایک واحد طریقہ ہے جو اس بنیادی تبدیلی کو پوری طرح سے واضح کرتا ہے۔

Spread the love